ادارے ایک پیج پر اور ملک کے اتحاد کی ضمانت ہیں . عمران خان

پوری قوم اپنے اداروں کے ساتھ کھڑی ہے. وزیراعظم کی بابر اعوان سے گفتگو

اسلام آباد(ملتان ٹی وی ایچ ڈی۔21 ستمبر ۔2020ء) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ادارے ایک پیج پر اور ملک کے اتحاد کی ضمانت ہیں پوری قوم اپنے اداروں کے ساتھ کھڑی ہے. وزیراعظم عمران خان سے مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے ملاقات کی ہے ملاقات میں ملکی سیاسی صورت حال ،حکومتی امور اور نئی قانون سازی پر مشاورت کی گئی ہے ملاقات میں اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس سے متعلق گفتگو کی گئی ہے.

وزیراعظم نے کہا کہ قومی ادارے قابل احترام ہیں اور تمام مسائل کے حل میں حکومت کیساتھ ایک پیج پر ہیںبتایاگیا ہے کہ اہم ملاقات میں ملک کے اہم قومی مسائل پر بات چیت بھی کی گئے. وزیراعظم اپنے رفقا سے مشاورت کی اور حزب اختلاف کی اے پی سی کا موثر طریقے سے جواب دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے خیال رہے کہ گزشتہ روز حزب اختلاف نے اپنی آل پارٹیز کانفرنس میں وزیراعظم عمران خان کے فوری استعفیٰ کا مطالبہ کیا تھا.

قبل ازیں سوشل میڈیا ویب سائٹ پر جاری اپنے ایک بیان میں وزیراعظم عمران خان نے کہاتھا کہ ہم اپوزیشن سے کرپشن کے سوا ہر چیز پر سمجھوتا کرنے کے لیے تیار ہیں‘ انہوں نے کہا کہ پاکستان کا مفاد اس میں ہے کہ چوری کیا ہوا پیسہ واپس آئے جب کہ اپوزیشن اس بات میں دلچسپی رکھتی ہے کہ ان کا چوری کا پیسہ محفوظ رہے. انہوں نے کہا کہ اپوزیشن سے ملک اور جمہوریت کی خاطر ہر طرح کا سمجھوتہ کرنے کے لئے تیار ہیں تاہم کرپشن پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں کریں گے اس سے قبل اسلام آباد میں مشیر داخلہ و احتساب شہزاد اکبر کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ ماضی میں ہمارے ملک کے حکمران منی لانڈرنگ میں ملوث رہے، جس کی وجہ سے ملک کی معیشت کو بہت نقصان پہنچتا ہے.ان کا کہنا تھا کہ پاکستان گرے لسٹ میں ماضی کی حکومتوں سے تھا۔

ہمیں دنیا کےساتھ چلنا ہے، عالمی قوانین پر عمل کرنا ہے‘وفاقی وزیر شبلی فراز کا کہنا تھاکہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) قانون ملک کے مفاد میں ہے. ہماری کوشش تھی ملکی مفاد کو مدنظر رکھ کر قانون سازی کریں اپوزیشن نے ملکی مفاد پر ذاتی مفاد کو ترجیح دی. اپوزیشن کی کوشش تھی کہ اپنے لیڈران کی کرپشن کیسے بچانی ہے.

ان کا کہنا تھاکہ ہمارے پاس قانون سازی کے علاوہ کوئی آپشن نہیں تھا ہم نے عوام کو آگاہ کیا کہ یہ قانون سازی کتنی ضروری ہے پاکستان کو گرے لسٹ سے نکال کر وائٹ لسٹ میں لانا فیٹف سیکرٹریٹ کا کام ہے اللہ کا شکر ہے قانون سازی ہوگئی اور اپوزیشن بے نقاب ہوگئی‘خیال رہے کہ اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی کل منعقدہوئی جس میں سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق صدر آصف علی زرداری ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *