ایف پی سی سی آئی نے اسٹاک ایکسچینج میں تعاون کرنے کی یقین دہانی کرائی

(ملتان ٹی وی ایچ ڈی۔ 20 نومبر 2020ء) میاں انجم نثار صدر ایف پی سی سی آئی نے ایف پی سی سی آئی ہیڈ آفس کراچی میں ایف پی سی سی آئی سینٹرل اسٹینڈنگ کمیٹی برائے کیپٹل مارکیٹ اینڈ سیکیورٹیز کے زیر اہتمام اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایف پی سی سی آئی پاکستان اسٹاک ایکسچینج سمیت تمام اداروں اور تنظیموں کے ساتھ تعاون کے لیے تیار ہے جو پاکستانیوں کی دولت بڑھانے اور معاشی بہبود کے لیے کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دیتے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ کیپٹل مارکیٹ مؤثردرمیانی مالی حوالوں کو بہتر بناتی ہے۔ یہ فنڈز کی گردش میں اضافہ کرتی ہے اس طرح کارکردگی میں بہتری لاتی ہے۔ اور سرمایہ کاری ، معاشی نمو اور ترقی کے حجم میں اضافہ کرتی ہے۔اس گفتگو کا مرکز بنیادی طور پر سرمائے کے حصول اور مستحکم اور ترقی کرتی ہوئی کمپنیوں کو عوامی فنڈز کی فراہمی کے امکانات تھا۔

ایف پی سی سی آئی نے اسٹاک ایکسچینج میں تعاون کرنے کی یقین دہانی کرائی


اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ ایف پی سی سی آئی پاکستان میں تمام کمپنیوں کے پروفائل کو اپنے ڈیٹا بیس پر اپ ڈیٹ کرے گا۔ تاکہ ان کی سرمائے کی ضرورت کا اندازہ لگایا جاسکے اور کیپٹل مارکیٹ کے ذریعے ان تک سرمایہ پہنچایا جاسکے۔ایف پی سی سی آئی سینٹرل اسٹینڈنگ کمیٹی برائے کیپٹل مارکیٹ اینڈ سیکیورٹیز کے کنوینر ہارون عسکری نے کیپٹل مارکیٹ کے کردار کو اس حوالے سے اجاگر کیا کہ یہ ملک کی معاشی نمو اور سرمائے کے حصول میں مدد گار ہوتی ہے۔
چیئرمین پی ایس ایکس ،سلیمان مہدی نے واضح کیا کہ کہ اسٹاک ایکسچینج مارکیٹ معیشت میں ایک اہم مقام رکھتی ہے۔انہوں نے کہا کہ اسٹاک مارکیٹ کاروبار اور صنعتوں کو سرمایہ فراہم کرکے سرمایہ کاروں کو اچھا منافع واپس کر کے معاشرے کی معاشی ترقی میں اپنا مضبوط کردار ادا کرتی ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ایس ایکس، اسٹاک ایکسچینج میں اندراج کے خواہاں کمپنیوں کی ہر ممکن مدد اور رہنمائی کے لیے تیار ہے اور اس مقصد کے لیے انہوں نے مشورہ دیا کہ ایک مناسب طریقہ کار اختیار کرنے، مستقل تعاون کو یقینی بنانے کے لیے اور ایک مضبوط ڈھانچہ تیار کرنے کے لیے ایف پی سی سی آئی اور پی ایس ایکس کے مابین باضابطہ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط ہوسکتے ہیں۔
عارف حبیب سیکیورٹیز کے شاہد علی حبیب۔اور ٹاپ لائن سیکیورٹیز کے محمد سہیل نے کچھ عملی مشکلات کا ذکر کرتے ہوئے اس بات سے اتفاق کیا کہ چھوٹی کمپنیوں کو کیپٹل مارکیٹ سے سرمائے کے حصول میں پیش آنے والی مشکلات کو حل کرنا ضروری ہے۔ اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ متعلقہ تمام فریق ان مشکلات کو دور کرنے کے لیے مل کر کام کریں گے۔زکریا عثمان سابق صدر ایف پی سی سی آئی نے میٹنگ کا اختتام کر تے ہوئے زور دیا کہ اب وقت آگیا ہے کہ تمام متعلقہ اسٹیک ہولڈرز مطلوبہ نتائج حاصل کرنے کے لیے مل کر کام کریں۔اس میٹنگ میں شاہد علی حبیب ، محمد سہیل ، حاجی غنی عثمان ، عادل غفار، پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے ٹی آر ای سی ہولڈر اور بزنس کمیونٹی کے دیگر سینئر ممبران نے بھی شرکت کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *